ہمارے پاس ضابطہ عمل ہونے کی کیا وجہ ہے

ایک اعلی کارکردگی کی حامل کمپنی ہونے کا مطلب صرف کارکردگی، اہداف اور کامیابی ہی نہیں ہے بلکہ اس سے مراد یہ بھی ہے کہ ہم ایک دوسرے سے اور اپنے ارد گرد موجود دنیا سے کس طرح برتاو کرتے ہیں۔ ہم اپنے صارفین، حصص داران اور ساتھیوں کے لیے اور کاروباری شراکت داروں کے لیے اور ان معاشروں میں جہاں ہم کام کرتے ہیں کے لیے ایک قابل اعتماد شراکت دار بننا چاہتے ہیں۔ ہمارے کاروبار کا انحصار اس اعتماد پر ہے اورہم اپنے کاروبار کو ایک ذمہ دارانہ، اخلاقی اور قانونی انداز میں کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔ یہ ضابطہ عمل ہماری تجارتی روایات کی بنیاد ہے اور ہمارے لیے کاروبارسرانجام دینے کے سلسلے میں ایمانداری کے اعلی معیارات کو وضع کرتا ہے۔ Telenor میں شامل ہر فرد کو ان معیارات کی پاسداری کرنی چاہیئے۔ ہم روزانہ ایسے فیصلے کرتے ہیں جو ہماری ساکھ پر اثر انداز ہو سکتے ہیں۔ ایک غیر مطلع شدہ فیصلہ چاہے کتنی ہی اچھی نیت سے کیوں نہ کیا گیا ہو، ہماری ساکھ کو خراب کر سکتا ہے۔

اس ضابطے کے اصول Telenor میں ہمارے طرزعمل کی اہم شرائط کو وضع کرتے ہیں۔ ضابطے کے مختلف حصوں میں انتہائی خطرے والے مقامات/پہلووں کے لیے مخصوص شرائط اورراہنمائی شامل ہے۔یہ ضابطہ عمل ہم سب کو مطلع شدہ فیصلے کرنے میں مدد دیتا ہے اوروضاحت کرتا ہے کہ مزید معلومات اور راہنمائی کہاں سے حاصل کی جا سکتی ہے۔

ضابطہ عمل کے راہنما اصول

ضابطے کے اصول ہماری اخلاقی ثقافت کی بنیاد بنتے ہیں اورہمارے کاروباری طرز عمل کی بنیاد کی وضاحت کرتے ہیں۔

ہم اصولوں کے تحت کام کرتے ہیں

ہم قوانین، قواعد و ضوابط اور اپنی پالیسیوں کی پاسداری کرتے ہیں اور تنازعے کی صورت میں ہم اعلی ترین معیار کو برقرار رکھتے ہیں-

ہم اپنے اقدامات کے لیے جوابدہ ہیں

ہم فعال انداز میں معلومات حاصل کرتے ہیں، اپنی ذمہ داریوں کو سمجھتے ہیں اوران معاشروں پر اپنے وسیع تاثر کو جانتے ہیں جن میں ہم کام کرتے ہیں۔

ہم شفاف اور ایماندار ہیں

ہم اپنے چیلنجز کے متعلق سچےاور شِفاف ہیں۔

ہم آوازُاٹھاتے ہیں

جب ہمیں شبہ ہو تو ہم سوالات کرتے ہیں اورانتقامی کارروئی کے ڈر سے بے خوف ہو کر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہیں

اس ضابطہ عمل کی پیروی کس نے کرنی ہے

اس ضابطہ عمل کا اطلاق Telenor کے تمام ملازمین اور ان تمام افراد پر ہوتا ہے جو Telenor کی جانب سے کام کر رہے ہوں، اس کا اطلاق بورڈ آف ڈائریکٹرز پر بھی ہوتا ہے۔ ہم اپنے فروخت کنندگان، سپلائرز، ٹھیکیداروں اور د یگر کاروباری شراکت داروں سے توقع کرتے ہیں کہ وہ بھی انہی اعلی اخلاقی معیارات کے لیے پرعزم رہتے ہوئےِ انہیں اختیار کریں گے جن کی ہم خود پاسداری کرتے ہیں۔

ضابطہ عمل کو کیسے استعمال کیا جائے

ضابطے کے چار اصولوں اور اس کے مختلف حصوں میں صراحت کردہ مخصوص شرائط و ضوابط سے ہماری بنیادی ذمہ داریاں وضع ہوتی ہیں۔ ہمارے راہنما کتابچوں اور پالیسیوں میں صراحت کردہ اضافی شرائط و ضوابط کو بھی سمجھنا اور ان پر عمل کیا جانا چاہیئے۔ ضابطے کے ہر ایک حصے کے اختتام پر آپ کو متعلقہ پالیسیوں اور راہنما کتابچوں کے لنکس ملنے کے ساتھ ساتھ دستیاب راہنما ہدایات، عملی مددگاروسائل، تربیتی مواداور دیگر مددگاروسائل کے لنکس بھی ملیں گے۔

یہ ضابطہ ہمارے روزمرہ امور کے نظم و نسق کے سلسلے اورہمیں اس وقت راہنمائی فراہم کرنے کے لیے واضح شرائط کو ترتیب دیتا ہے جب ہمیں چیلنجز اور اخلاقی گومگو کا سامنا ہوتا ہے۔ خدشات یا سوالات کی صورت میں راہنمائی کی ضرورت ہو توآپ ہمیشہ اپنے لائن منیجر یا شعبہء کمپلائنس سے رابطہ کر سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ آپ Integrity Hotline کو گمنام رہتے ہوئے (اگر آپ ایسا چاہیں) استعمال کر سکتے ہیں اور مشورہ بھی حاصل کر سکتے ہیں۔

یہ ضابطہ ہر ایک ایسی گومگوکی صورتحال یا حالت کا احاطہ نہیں کر سکتا جن کا ہمیں اپنے کاروبار میں سامنا ہو گا۔ کاروباری چیلنجز اور غیریقینی قانونی اور ریگولیٹری ارتقاء کا سامنا ہوتا رہے گا۔ ایسی صورتوں میں اعلی ترین اخلاقی معیار برقرار رکھنے کی ذمہ داری ہم پر سے ساقط نہیں ہوتی لیکن ہمیں درست فیصلہ کرنے کے سلسلے میں مدد کے لیے راہنمائی حاصل کرنی چاہیئے۔ اپنے اخلاقی معیارات کو ترتیب دینے کے علاوہ، ضابطے کے اصول ہم سے نافذ العمل قوانین اور قواعد و ضوابط کی پاسداری کے متقاضی ہیں۔ آپ کو چاہیئے کہ ہمیشہ اس مقام کے قوانین سے واقفیت حاصل کریں جہاں آپ کام کرتے ہوں اور استفسارات کی صورت میں شعبہء قانون سے راہنمائی حاصل کریں۔

بطور ملازمین ہم سے کیا توقع کی جاتی ہے

  • Telenor کے ملازم کی حیثیت سے آپ سے توقع کی جاتی ہے کہ آپ:

    • ہمیشہ انتہائی ایمانداری کے ساتھ کام کریں گے
    • ضابطے، پالیسیوں، راہنما ہدایات پر مشتمل کتابچوں کو پڑھیں، سمجھیں اور ان کی پاسداری کریں گے۔
    • ’’بات کیسے کی جائے‘‘ کے عنوان کے تحت سیکشن میں کی جانے والی صراحت کے مطابق ایسے معاملات پر آواز اٹھائیں گے جن پر آپ کو تحفظات ہوں۔
    • بروقت تربیت حاصل کریں گے۔
    • یہ جانیں گے کہ کب اور کس طرح مزید راہنمائی حاصل کی جائے۔
    • تمام تعمیلی تحقیقات میں مکمل اور شفاف طور پر تعاون کریں گے۔
    • ایسے تمام کاموں سے گریز کریں گے جو غیرقانونی، غیر اخلاقی ہو سکتے ہیں یا Telenor کی ساکھ کو نقصان پہنچا سکتے ہیں

ہمارے راہنماوں سے کس چیز کی توقع کی جاتی ہے

راہنماوں سے نہ صرف مذکورہ بالا شرائط و ضوابط پر عمل پیرا ہونے کی توقع کی جاتی ہے بلکہ ان سے یہ توقع بھی کی جاتی ہے کہ وہ:

  • خود عملی مظاہرے کا اظہار کریں گے اور تعمیل کی اہمیت پر باقاعدگی سے ابلاغ کریں گے۔
  • کاروباری تعمیلی خطرات کے ایسے پہلووں کی نشاندہی اور پیش بینی کریں گے جو آپ کی ٹیم کی کارکردگی کو متاثر کر سکتے ہیں۔
  • قبل از وقت ایسے اقدامات کی نشاندہی کریں گے جن سے خطرات میں کمی آئے گی۔
  • اس امر کو یقینی بنائیں گے کہ ٹیمیں اچھی طرح تربیت یافتہ ہیں اور وہ متعلقہ مسائل سے نمٹنے کے لیے تیار ہیں اور جہاں ضرورت ہو رہنمائی فراہم کریں۔
  • کھلے انداز میں رپورٹنگ کے ماحول کی ترویج کریں گے تا کہ اس امر کو یقینی بنایا جا سکے کہ ٹیم کے تمام اراکین انتقامی کارروائی کے ڈر سے بے خوف ہو کر اپنے تحفظات کے اظہار میں آسانی محسوس کریں۔
  • بھرتی اورترقی کے عمل میں ایمانداری کے اعلی ترین معیارات کو مدنظر رکھیں گے۔
  • Telenor میں تعمیلی عمل اور انتظامی معاملات میں فعال طور پر حصہ لیں گے۔